We use cookies to provide some features and experiences in QOSHE

More information  .  Close
Aa Aa Aa
- A +

ایک اور سیاسی اتحاد

3 0 0
18.01.2019

واہ واہ کیا بات ہے، پاکستان پر طویل عرصے حکمرانی کر نے والوں کی ۔ بظاہر دو بڑی سیاسی جماعتوں نے ایک اور سیاسی اتحاد قائم کرنے کے لئے ایک دوسرے سے ہاتھ ملالیا۔ پاکستان میں اسوقت جمہوری تقاضوں کے تحت پاکستان تحریک انصاف کی وفاقی، خیبرپختونخوا اور صوبہ پنجاب میں حکومتیں ہیں۔ حیلے بہانے سے عمران خان مخالف سیاست داں ان کی حکومت کے خلاف کئی عنوانات کے تحت بیانات تو داغ رہے ہیں۔ ن لیگ کا مسلہ یہ ہے کہ اس کے قائد نواز شریف سیاست سے عمر بھر کے لئے ناہل قرار دئے گئے ہیں، ایک مقدمہ میں انہیں دس سال اور ان کی صاحبزادی مریم کو سات سال قید کی سزا سنائی گئی ہے۔ پاکستان کی قومی سیاسی قیادت کی سزائیں تکلیف دہ امر ضرور ہیں، لیکن مقدمات کی بنیاد ان کی مالی بدعنوانیاں ہیں۔

صوبہ سندھ میں حکمران جماعت پاکستان پیپلز پارٹی پارلیمینٹیرین کے چیئر مین و سابق صدر پاکستان آصف علی زرداری اور ان کی ہمشیرہ فریال تالپور جو خواتین شاخ کی سربراہ ہیں اور پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول زرداری اور سندھ کے وزیراعلیٰ کو سپریم کورٹ کی جانب سے تشکیل دی گئی جے آئی ٹی کی تحقیق و تفتیش کردہ رپورٹوں کے مطابق منی لانڈنگ سمیت مختلف الزامات کا سامنا ہے۔ ان کے لئے یہ مرحلہ نہایت اہم یوں ہے کہ مقدمات کی باقاعدہ سماعت کا نتیجہ عین ممکن ہے ان کے حق میں نہیں نکلے۔ یہ صورت حال ان کے لئے یقیناًتشویش ناک ہے۔ کچھ بھی ہوسکتا ہے۔ اسی کچھ ہونے سے بچنے کے لئے آصف زرداری نے ن لیگ کے موجودہ سربراہ شہباز شریف سے ہاتھ ملا لیا ہے۔ حالانکہ ماضیٰ میں پیپلز پارٹی اور ن لیگ کے قائدین ایک دوسرے کے خلاف جس طرح کی غیر پارلیمانی اور غیر اخلاقی زبان استعمال کرتے رہے ہیں اور ایک دوسرے کو معتوب کرنے کے لئے سخت الزامات عائد کرتے رہے ہیں ، وہ بذات خود ایک سوالیہ نشان ہے۔ کیا پاکستانی عوام بھول سکتے ہیں کہ پاکستانی سیاست پر طویل عرصے تک حاوی رہنے والے لوگ کس کس........

© Daily Pakistan (Urdu)